50

کہیں آپ بھی پانی کی کمی کا شکار تو نہیں؟

عموماً مطلوبہ مقدار میں پانی پینا بھول جاتے ہیں لیکن گرمیوں کے موسم میں ہمیں اس بات کا خیال رکھنا چاہیئے کہ ہمارے جسم میں مناسب مقدار میں پانی موجود ہو۔

اگر آپ مطلوبہ مقدار میں پانی نہیں پیتے تو آپ سردرد یا متلی کی کیفیت کا شکار ہوسکتے ہیں اور کسی جانب توجہ برقرار رکھنا آپ کیلئے مشکل ہوسکتا ہے۔

نیشنل ہیلتھ سروس کاادارہ ایک دن میں 6تا8پانی کے گلاس پینے کی تجویز کرتا ہے لیکن عین ممکن ہے آپ اس معاملے میں بے احتیاطی برت جائیں۔ لہٰذا ایک انتہائی سادہ سے جِلد کے ٹیسٹ سے معلوم کیا جاتا ہے کہ آپ کے جسم میں تجویز کردہ مقدار کے مطابق پانی ہےیا نہیں۔

یہ ٹیسٹ آپ کی جِلد کی لچک پر منحصر ہوتا ہے یعنی آپ کی جِلد کتنی آسانی سے ساخت تبدیل کرتی ہے اور واپس اپنی شکل میں آجاتی ہے۔ عام طور پر جِلد کو فوری طور پر اپنی شکل میں واپس آجانا چاہیئے۔

یہ ٹیسٹ آپ اپنے ساتھ بھی کرسکتے ہیں۔ اپنی ہاتھ کی پشت پر کچھ سیکنڈز تک چٹکی نوچیں۔ اگر جِلد فوراً اپنی ساخت میں واپس آجائے تواس کا مطلب ہے، آپ کے جسم میں پانی کی مطلوبہ مقدار موجود ہے۔ اگر نہیں تو اس کا مطلب ہے کہ آپ کو مزید پانی پینے کی ضرورت ہے۔

ماہرِ خوراک علی ویبسٹر کہتے ہیں کہ اگر آپ چائےاور کافی پیتے ہیں تو دن کے 6سے 8 گلاس پانی آپ اس سے حاصل کرسکتے ہیں، یہ آپ کے جسم میں موجود پانی کو خشک نہیں کرے گی۔

جوسز اور سوڈا بھی آپ کو دن بھر کا پانی پہنچانے میں مدد دیتے ہیں لیکن خیال ہونا چاہیئے ان میں بڑی مقدار میں چینی موجود ہوتی ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں