“بیٹا موبائل تو ٹھیک ہے نا”

KaprayWapray.com

کسی زمانے میں روزانہ رات کو باقاعدگی سے ابو کی ٹانگیں دباتا اور سر کی مالش کرتا تھا
پھر لیپ ٹاپ اور انڈرائڈ موبائل آیا اور اس فریضے کو گویا بھول ہی گیا
پچھلے دنوں ابا جی ایک لمبے سفر سے لوٹے تو تھکن کی وجہ سے چال میں کچھ لنگراہٹ سی محسوس ہوئی
نہ جانے کیوں دل میں خیال آیا اور ابا کی ٹانگیں دبانے بیٹھ گیا ابا نے بس ایک سوال پوچھا

“بیٹا موبائل تو ٹھیک ہے نا”

یہ چند لفظوں کا ایک سوال نہیں ہزاروں لفظوں پے بھاری ایک نوحہ ہے

کچھ لوگ بڑے حساس ہوتے ہیں انہیں سب نظر آتا ہے لیکن وہ کچھ نہیں کہتے

سوشل میڈیا میں غرق بچو اپنے والدین کو وقت دو
ان کے چہرے پڑھو
ان کے کہنے کا انتظار نہ کرو

KaprayWapray.com

Facebook Comments

Comments are closed.